Home coronavirus پی ٹی آئی مرکزی رہنما و پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ کی انصاف ہائوس میں پریس کانفرنس

پی ٹی آئی مرکزی رہنما و پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ کی انصاف ہائوس میں پریس کانفرنس

1 second read
0
0
183

کراچی:

پی ٹی آئی مرکزی رہنما و پارلیمانی لیڈر حلیم عادل شیخ کی انصاف ہائوس میں پریس کانفرنس

رمضان کے مہینے میں خاص کر کے عبادتگاہوں پر لاک ڈائون سخت کئے گئے

سندھ حکومت نے عوام کو اس ماہ میں عبادت نہیں کر دی ہے۔

سندھ حکومت نااھل حکومت ہے

وزیر اعلیٰ کو پتہ ان کو جانا نہیں ہے سیٹ سے

وزیر اعلیٰ کی نوکری پکی ہوچکی ہے

وزیر اعلیٰ کی کنجی سے 15 ھزار ارب روپے نکلیں ہیں

خوف پھیلایا گیا اس کے علاقہ سندھ حکومت نے کجھ نہیں کیا

کرونا کا بلیٹن روزانہ وزیر اعلیٰ ہائوس میں چلتا ہے

عمران خان کابینا کے ساتھ بتاتے ہیں عوام کو رلیف دیا گیا ہے

144 ارب عوام کو دیئے گئے عوام کو سہولیات دی گئیں

مراد علی شاہ صرف کرونا کی تعداد بڑھانے کے لئے رونا دھونا بلیٹن لگاتے ہیں

عوام نے سندھ حکومت کے خلاف بد دعائیں دینا چاہییں

لیکن سازش کے تحت سندھ حکومت نے مساجد ہی کو بند کروا دیا

قرآن مجید میں آتا ہے کہ جو لوگ مساجد کو بند کرنے والے ظالم ہے

جن حکمرانوں نے عبادتگاہوں کو بند کروایا ہے ان کے لئے رسوائی ہے

ایس او پی ایز کے تحت نمازیں پڑھنے کی لئے مساجید کیوں نہیں کھولی گئی

عمران کان کی حکومت کو ناکام کرنے کے لئے کراچی کو بند کیا گیا تھا

مراد علی شاہ اینڈ کمپنی نے بڑی سازش کی تھی

وزیر اعلیٰ نے سندھ میں مذھبی فتنا پیدا کیا ہے

گلی محلوں میں اشوز بن رہے ہیں

جلوسوں کو اجازت نہیں دی گئی جلوس ہوا پھر گرفتاریاں ہوئیں

وزیر اعلیٰ نے سندھ میں مذھبی انتشار پھیلایا

مساجد اور امام بارگانوں میں نمازی پریشان ہیں

حکومتیں آگ پر پانی ڈالتی ہیں وزیر اعلیٰ سندھ آگ پر پئٹرول ڈال رہے ہیں

کرونا ایک عالمی وبا ہے کسی مذہب جماعت کو قصور وار نہیں ٹھہرایا جاسکتا ہے

مساجد میں فوری طور پر ایس او پیز کے تحت نمازوں کی اجازت دی جائے

سندھ میں مذہبی فسادات دیکھ رہے ہیں ایسا نہیں ہونا چاہیے

ہم اپنی مساجد میں جائیں گے نمازیں ادا کریں گے

ٹرانسپورٹ نہ ہونے کی وجہ بھتہ خوری ہورہی ہے

کاریں چل رہی ہیں پبلک ٹرانسپورٹ بند کری گئی ہے

ٹرانسپورٹ کو بھی ایس او پی ایز کے تحت چلایا جائے

15 ھزار کا ارب سدھ میں بارہ سالوں سے استعمال ہورہا ہے

عوام کو کہیں بھی سندھ حکومت نے ماسک تک نہیں دیا

ٹرانسپہورٹ کا کہا جارہا ہے عید کے بعد کھلیں گی

مزدوروں عید پر گھر کیسے جائیں گے عوام پریشان ہے

سندھ حکومت میں بڑے بڑے نوسر باز بیٹھے ہیں

کراچی کے ووٹر کو جان بوچھ کر تنگ کیا جارہا ہے

انٹرا سٹی اور سٹی کی ٹرانسپورٹ کھولی جائے

اگر ٹرانسپورٹ نہیں کھولتے تو ان وزیروں کو بھی حق نہیں سفر کرنے کا

یہ نواب مشیر اور وزراء سب عوام میں سے ہیں ان کو بھی گاڑی میں نہیں چلنا

کاروں کی اجازت ہے بسوں کی کیوں اجازت نہیں ہے

نادر شاہی حکم دیا جارہا ہے کہ ٹرینیں بھی نہیں کھلنے دیں گے

تاجروں نے مطالبہ کیا ہے کہ رات دو بجے تک مارکیٹیں کھولی جائیں

عید کا موسم ہے یہ مطالبہ منظور کیا جائے

مارکیٹیں 24 گھنٹوں کے لئے ایس او پی ایز کے تحت کھولی جائیں

عوام کا رش نہیں ہوگا اور ایس او پیز کے بھی عمل ہوگا

انتظامیہ ناکام ہوچکی ہے عوام کو آگاہی دینے میں

18 ایکڑ کا قبرستان بنا دیا گیا ہے اگلے سال وہاں بھی کوئی گوٹھ ہوگا،

نادرن بائی پاس کرونا سے فوت ہونے والی خاتون کو پھینکا گیا

جن کی پہنچ ہے اپنے اپنے قبرستانوں میں لے جاتے ہیں

غریبوں کو جنازہ ادا کرنے تک نہیں دیا جاتا ہے

مرنے کے بعد بھی بڑے لوگوں کے لیے الگ الگ ایس او پیز ہیں

نبیب گبول سے پوچھیں کون کون ڈیٹ باڈی پر کون پئسے دے رہا ہے

بڑھا چڑھا کر کونا کے کیس سندھ میں پیش کیے جار رہے ہیں

پیر گوٹھ میں کرونا کے کیس جعلی نکلی

پروائیوٹ لیب سے نیگیٹیو آگئے ہیں

اس کیا حقیقت ہے کیوں کرونا کے مریض بڑھائے جارہے ہیں

بڑے لوگوں کے لئے وینٹیلیٹر ہیں غریبوں کو نہیں دیئے جاتے

سعید غنی بڑی بڑی باتیں کرتے ہیں بتائیں ان کی حکومت نے مزدوروں کو کیا دیا

غریبوں کو صرف انگوٹو دیا گیا ہے باتیں بڑی بڑی کی گئی ہیں

سندھ حکومت تین ارب 35 کروڑ 70 لاکھ کرونا پر خرچ کر چکے ہیں

ایک کروڑ 33 لاکھ ایکسپو سینٹر کو دیئے گئے پہلے بتا دیا گیا

پی پی ایز ڈاکٹروں کے سوٹ کے لئے تین کروڑ 23 لاکھ لگائے

ڈاکٹروں پئرا میڈیکل کو ماسک تک نہیں دیا گیا

وی ٹی ایم کے لئے ایک کروڑ 52 لاکھ خرچ کئے گئے

ریپیڈ کٹس کے لئے تیس لاکھ خرچ کئے گئے

اس کے علاقہ کٹوں سمیت دیگر اخراجات بتائے گئےہیں

انڈس اسپتال کو 10 مارچ کو تیس کروڑ دیئےگئے

انڈس اسپتال میں بیس کرونا کے بیڈ ہیں اتنی رقم دی گئی

حیدرآباد کے ڈائریکٹر کو دس کروڑ دیئے گئے

ہیلتھ ڈپارٹمنٹ سمیت ڈی سی ملیر سمیت دیگر کو
کروڑوں دیئے گئے

راشن کے لئے دو کروڑ ایک بار پھر اور پئسے دیئے گئے

عمرکوٹ میں ڈیڑ کروڑ دیئے گئے ایک لاڈلے کو کرپشن کے لئے دیئے گئے

ساڑے تین ارب روپے سندھ کے حکمران کھا چکے ہیں

ٹڈی دل کے چکر میں ساٹھ کروڑ روپے ڈٹی دل کھا گئی

پچھلے سال 32 کروڑ ملے تھے اسماعیل راہو جواب دیں

28 کروڑ ٹڈی دل کے خاتمے کے لئے پچھلے ہفتے سندھ کو ملے

وفاق نے کئی کروڑوں کی دوائیاں دیں لیکن سندھ حکومت نے کہیں اسپرے تک نہیں کیا

پنجاب میں شہر شہر میں اسپرے ہورہے ہیں

سندھ حکمرانوں نے عوام کی 15 ارب کی گندم کھا گئے

تھر میں ساڑے ساتھ ارب کے سات سو آر آو پلانٹ ناکارہ پڑے ہیں

ایشیا کا سب سے بڑا آر او پلانٹ بھی تھر میں بند پڑا ہے

تھرپارکر کے آر اور پلانٹ بند پڑے ہیں تھر کی عوام پیاسی ہے

سندھ حکمران ڈرامے کر رہی ہے عوام بوند بوند کو ترس رہی ہیں

کراچی سے لیکر تھر تک عوام کو پانی نہیں دیا جارہا

ہائیڈریٹ سے پانی ملتا ہے لیکن نل میں پانی نہیں آتا

سندھ کے حکمران اس وقت کے یزید ہیں سندھ کا پانی بند کیا گیا

کربلا بنا دیا گیا ہے عوام کی پانی کی بوند بوند سے
ترسایا جارہا ہے

وفاق کی جانب سے لاکھوں ماسک، پی پی ایز، و دیگر سامان سمیت کٹس دی گئی ہیں

لیکن ڈاکٹروں کے دینے کے بجائے سندھ کے حکمرانوں کے ملازم استعمال کر رہے ہیں

ایک کڑوڑ ڈالر وفاق نے سب سے پہلے سندھ کو دیا گیا

اتنا صحت کا بجیٹ ہونے کے باوجود اسپتال بند پڑے ہیں

سندھ میں کتوں کی ویکسین نہیں ملتی ہے

علاج کے لئے پرائیوٹ اسپتالوں سے ایگریمنٹ کیئے جارہے ہیں

نواز زرداری کی ایک جوڑی ہے نیب نے دونوں کو بلایا ہے

اب چور پکڑے گئے ہیں شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے

ان کی پرکشن ظاہر ہوچکی ہے دونوں ٹانگوں سے پھنس چکے ہیں

مراد علی شاہ اور ان کے بہنونی آصف حیدر شاہ کے ذریعے کرپشن کی

آصف حیدر شاہ کی اجازت کے بغیر کسی بیوروکریٹس کی ٹرانسفر پوسٹنگ نہیں ہوتی

وزیر اعلیٰ کے اتنے اشور ہیں عید کے بعد ایک ایک اشو پر الگ الگ پریس کانفرنس ہوگی

مراد علی شاہ نے اپنے فرنٹ مین کے ذریعے کرپشن کی ہے

مراد علی شاہ نے اپنے رشتہ داروں کو کرپشن کرنے پر لگایا ہوا ہے

 

 

Load More Related Articles
Load More By admin
Load More In coronavirus

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also

MPA Sharmila Farooqui enjoying Halloween

Sharmila Farooqi is a famous Pakistani politician and belongs to a political background fa…